بھارتی دواؤں کے استعمال سے مبینہ طور پر 66 بچے ہلاک، عالمی ادارہ صحت نے الرٹ جاری کر دیا | اردو میڈیا

admin
admin 7 اکتوبر, 2022
Updated 2022/10/07 at 10:52 صبح
302115 072727 updates
302115 072727 updates

گیمبیا نے بھارت کی ’میڈن فارماسیوٹیکل کمپنی‘ کی ان دواؤں کی درآمد روک دی ہے — فوٹو: فائلبھارتی کمپنی کے کھانسی کے شربت کے مبینہ استعمال سے افریقی ملک گیمبیا میں 66 بچے ہلاک ہوگئے  جس کے بعد عالمی ادارہ صحت نے الرٹ جاری کر دیا ہے۔عالمی ادارہ صحت کی جانب سے زکام، بخار اور کھانسی کی چار بھارتی ادویات کو مضرِ صحت قرار دیا گیا ہے۔66 بچوں کی ہلاکت نے دنیا کی فارمیسی کہلانے والے بھارت کی ساکھ کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔بھارتی حکام کے مطابق وہ عالمی ادارہ صحت کی رپورٹ کے منتظر ہیں، دستیاب معلومات کی بنیاد پر تحقیقات شروع کردی گئی ہیں۔پرومیتھیزین، کوفکس میلن، میکاف اور میگرپ نامی یہ سیرپ عموماً بچوں کو تجویز کیے جاتے ہیں، گیمبیا نے بھارت کی ’میڈن فارماسیوٹیکل کمپنی‘ کی ان دواؤں کی درآمد روک دی ہے۔عالمی ادارہ صحت نے اپنے الرٹ میں کہا ہے کہ ان دواؤں کے جن نمونوں کی جانچ کی گئی ہے اُن میں ایسے کیمیکلز پائے گئے ہیں جو گردوں کو ناکارہ بنا دیتے ہیں۔عالمی ادارہ صحت کے مطابق یہ کیمیکلز  بریک فلوئڈز اور صنعتی آلات میں استعمال ہوتے ہیں اور بعض ادویات میں سستے متبادل کے طور پر شامل کیے جاتے ہیں۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے