صدر مملکت آرٹیکل 48 کے تحت آرمی چیف کی تقرری کی ایڈوائس واپس بھیج سکتے ہیں: ماہر قانون | اردو میڈیا

admin
admin 25 نومبر, 2022
Updated 2022/11/25 at 9:34 صبح
307704 093312 updates
307704 093312 updates

وزیراعظم نئے آرمی چیف کیلئے لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو نامزد کرتے ہیں تو یہ غیرآئینی و غیرقانونی ہوگا: شعیب شاہین/ فائل فوٹواسلام آباد ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر شعیب شاہین نے کہا ہےکہ صدر مملکت آئین کے آرٹیکل 48کے تحت آرمی چیف کی تقرری کی وزیراعظم کی ایڈوائس واپس بھیج سکتے ہیں۔جیونیوز کے پروگرام کپیٹل ٹاک میں گفتگو کرتے ہوئے شعیب شاہین نے کہا کہ وزیراعظم نئے آرمی چیف کیلئے لیفٹیننٹ جنرل عاصم منیر کو نامزد کرتے ہیں تو یہ غیرآئینی و غیرقانونی ہوگا، یہ اس لیے غلط ہوگا کہ نئے آرمی چیف کی تقرری کا نوٹیفکیشن جس دن مؤثر ہوگا اس دن ان کا جاب میں رہنا ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ جنرل باجوہ نے پچھلے سال فروری تک سیاست میں فوج کی مداخلت قبول کرلی ہے، پچھلے سات آٹھ مہینے کا کنڈکٹ دیکھیں تو کیا ہم کہہ سکتے ہیں کہ سیاست میں مداخلت ختم ہوگئی ہے، نئے آرمی چیف کیلئے سب سے بڑا چیلنج معیشت کی بحالی ہوگا، فوج جس دن حقیقی طور پر غیرسیاسی ہوجائے گی ملک میں سکون آجائے گا۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے