امریکی پارلیمنٹ پر حملے میں ملوث سابق پولیس افسر کو 87 ماہ قید کی سزا | اردو میڈیا

admin
admin 12 اگست, 2022
Updated 2022/08/12 at 12:02 شام
295370 031136 updates
295370 031136 updates

امریکی فیڈرل پراسیکیوٹرنے کیس میں ملزم کو 8 سال قید کی سزا کی سفارش کی تھی، ملزم پہلے ہی 13 مہینوں سے جیل میں ہے/ فوٹو اے پیواشنگٹن: امریکی عدالت نے کیپیٹل ہل پر حملے میں ملوث سابق پولیس افسر کو 87 ماہ قید کی سزا سنادی۔غیرملکی میڈیا کے مطابق ورجینیا پولیس کے سابق سارجنٹ پرالزام تھا کہ اس نے سابق امریکی صدر ٹرمپ کے دور حکومت کے آخری ایام میں ٹرمپ کے حامیوں کی جانب سے پارلیمنٹ کی عمارت پر کیے جانے والے حملے کی حمایت کی تھی۔سابق امریکی صدر کے حامیوں کی جانب سے پارلیمنٹ کی عمارت کیپیٹل ہل پر یہ حملہ 6 جنوری 2021 کو کیا گیا جس میں متعدد افراد نے پارلیمنٹ کی عمارت پر ہلہ بولہ جب کہ ٹرمپ نے ان کی حوصلہ افزائی کی۔میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق پولیس سارجنٹ تھامس رابرٹسن کو امریکی ڈسٹرکٹ جج کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں عدالت نے ملزم کو 7 سال 3 ماہ قید کی سزائی سنائی جو حملے میں ملوث افراد کو سنائی جانے والے سب سے بڑی سزا ہے جب کہ ملزم نے عدالت کے سامنے کوئی بھی بیان دینے سے انکار کردیا۔عدالت ملزم کو رہائی کے بعد تین سال تک اس کی نگرانی کرنے کا بھی حکم دیا ہے۔امریکی فیڈرل پراسیکیوٹرنے کیس میں ملزم کو 8 سال قید کی سزا کی سفارش کی تھی، ملزم پہلے ہی 13 مہینوں سے جیل میں ہے۔عدالت نے کہا کہ وہ ملزم کی حراست کے بعد سے اس کے عمل پر حیران ہے نہ صرف اس کے اسلحہ جمع کرنے بلکہ اس کے الفاظ سے بھی اشتعال پھیلا۔عدالت کے مطابق ملزم نے اپنے دوست سے کہا تھا کہ وہ خانہ جنگی میں مرنے اور مارنے کے لیے بھی تیارہے جب کہ اس نے 2020 کے الیکشن کے حوالے سے بھی بے بنیاد پروپیگنڈہ کیا۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔