پولیس رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع، عمران خان بدنظمی کے ذمہ دار قرار | اردو میڈیا

admin
admin 10 جون, 2022
Updated 2022/06/10 at 8:12 صبح
288252 120437 updates
288252 120437 updates

فواد چوہدری ، زرتاج گل، سیف اللہ نیازی اور عمران اسماعیل سمیت دیگر رہنما کارکنان کو اشتعال دلاتے رہے: اسلام آباد پولیس کی رپورٹ/ فائل سوشل میڈیااسلام آباد: آئی جی اسلام آباد نے تحریک انصاف کے لانگ مارچ سے متعلق کیس میں اپنی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرادی۔اسلام آباد پولیس کی رپورٹ کے مطابق مظاہرین کو ریڈ زون میں داخل ہونے کیلئے چیئرمین پی ٹی آئی نے ہدایت دی اور سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود مظاہرین ریڈ زون میں داخل ہوئے، اس دوران 700 سے 800 مظاہرین ریڈ زون میں داخل ہوئے۔رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ ریڈ زون میں مظاہرین کے داخلے کے دوران 21 شہری زخمی ہوئے، پولیس نے مظاہرین کو روکنے کے لیے آنسوگیس کا استعمال بھی کیا، تحریک انصاف کے کارکن اسلحہ سے لیس تھے اور ڈنڈے بھی اٹھا رکھے تھے۔رپورٹ میں مزید بتایاگیا ہےکہ چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کے ویڈیو پیغام میں کارکنوں کو ڈی چوک پہنچنے کا کہا گیا، پولیس اوردیگرقانون نافذ کرنے والے اداروں نے مظاہرین کو روکنے کی ہرممکن کوشش کی لیکن مظاہرین نے کنٹینرز اور دیگر رکاوٹیں ہٹائیں۔رپورٹ کے مطابق فواد چوہدری ، زرتاج گل، سیف اللہ نیازی اور عمران اسماعیل سمیت دیگر رہنما کارکنان کو اشتعال دلاتے رہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہےکہ تحریک انصاف کا کوئی کارکن ایچ 9 گراؤنڈ نہیں پہنچا اور چیئرمین تحریک انصاف سپریم کورٹ کے حکم کے باوجود ایچ 9 گراونڈ نہیں گئے۔پولیس رپورٹ میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کولانگ مارچ کے دن ڈی چوک پربدنظمی کا ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے۔

اس آرٹیکل کو شیئر کریں۔
ایک تبصرہ چھوڑیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

ہمارا فیس بک پیج لائک کریں۔

ہمارے فیس بک پیج کو لائک کرکے تازہ ترین اپڈیٹس حاصل کریں۔


This will close in 30 seconds

AllEscort